Personal

Our artists have drowned in waters of oblivion: Kamal Ahmed Rizvi

June 27, 2015

Express Tribune — KARACHI: Kamal Ahmed Rizvi is the man behind one of the most celebrated sitcoms in the country’s history, Alif Noon. His show was so popular that when he once took his car to a workshop, the mechanic refused to repair it, saying he had to go watch an episode of the show that was being aired. If Rizvi may say so himself, “Interests and trends change with time, but those who grew up watching the series still remember it like [they watched it] ۔۔۔

تھیٹر اور ٹی وی کے لیے فرید خان کی خدمات قابل ستائش ہیں،انورمقصود

June 27, 2015

اکسپرس نیوز — کراچی: نامور مزاحیہ اداکار فرید خان کو جو ان دنوں کینسر کے مرض میں مبتلا ہیں لطیف کپاڈیا میموریل ٹرسٹ کی جانب سے 5لاکھ روپے کا چیک پیش کیا گیا،معروف رائٹر اور کمپئیر انور مقصود نے انھیں چیک پیش کیا ۔۔۔

Saiyid Hamid hospitalised but stable

December 19, 2014

Ummid — Mumbai: Saiyid Hamid, former Chancellor of Jamia Hamdard and former Vice Chancellor of Aligarh Muslim University (AMU), and one of the tallest figures of Muslims in India today, who was admitted to a hospital in New Delhi Thursday is stable and foing ۔۔۔

Translating Hindu scriptures into Urdu

December 9, 2014

Keshav Yadav — With an endeavour to bridge gaps between communities and create harmony in the society, President of Muslim Mahila Foundation, Nazneen Ansari, hailing from Varanasi, translates Hindu scriptures into Urdu so that more and more readers from her community can understand and relate to beliefs mentioned in these ۔۔۔

ممتاز شاعر نقاش کاظمی پر فالج کا حملہ

November 8, 2014

نوائے وقت — کراچی( خصوصی رپورٹر) ممتاز شاعر نقاش کاظمی پر فالج کا حملہ ہوگیا، وہ صاحبِ فراش ہیں اور گھر پر ہی ہیں۔ یاد رہے کہ وہ پہلے دل کے عارضے میں بھی مبتلا رہے ہیں۔ اہل خانہ نے احباب سے ان کی صحت یابی کیلئے دعا کی درخواست کی ۔۔۔

شاعر حنیف عاطر فالج کے حملے کے بعد سخت صاحب فراش

November 5, 2014

اُردو پوائنٹ — جھڈو (اُردو پوائنٹ تاز ترین اخبار۔ 5نومبر 2014ء) نئی نسل کے شاعر اور سندھی زبان میں کلماتی غزل کی شاعری متعارف کروانے والے مشہور شاعر حنیف عاطر فالج کے حملے کے بعد سخت صاحب فراش ہو کر چلنے پھرنے اور بولنے سے بھی معذور ہو کر بستر تک محدود ہو گئے ہیں ۔ جب کہ ان کے ورثاء مالی وسائل نہ ہونے کی وجہ سے علاج معالجہ نہیں کرا سکے ہیں ۔ اردو ، سندھی اور پنجابی زبانوں کے شاعر رانا حنیف عاطر کے بیٹوں نے بتایا کہ وہ نجی اسپتالوں کا خرچہ برداشت کرنے کی سکت نہیں رکھتے اس وجہ سے وہ بعض حکیموں سے علاج کروا رہے ہیں اور دیسی علاج سے حنیف عاطر کو کوئی افاقہ ہوتا ہوا نظر نہیں آتا۔ حنیف عاطر نئی نسل میں مقبول ہیں جنہوں نے شاعری مین جدت کا رنگ بھرا ان کی شاعری کے مجموعے مٹی جو درد، اکھین رنج میڑیا، اور ہوا کا لہجہ ، طبع ہو کر ہاتھو ں ہاتھ لئیے گئے تھے۔جھڈو ادیبوں ، شاعروں ایاز رضوی، قادر سیال، سید مشتاق شاہ راشدی اور دیگر نے صوبائی حکومت اور ثقافتی اور سیاحت کے وزیر سے مطالبہ کیا ہے کہ حنیف عاطر کا سرکاری خرچ پر ۔۔۔