ژند (غزلیات) شاعر: اذلان شاہ

Follow Shabnaama via email
اقبال خورشید

قیس تیار تھا خیرات میں دینے کو مجھے
دشت لیکن مرے کاسے میں نہیں آتا تھا

یہ کتاب صحافت کو ترک کر خود کو ادب کے وقف کرنے والے، گوجرہ کے اذلان شاہ کا شعری مجموعہ ہے، جو 133 غزلوں پر مشتمل ہے۔ شاعری پر جامع تنقید تو ناقدین کا کام، ان صفحات پر اطلاعاتی جائزے ہی کا امکان ہے۔ مختصراً یہ کہا جاسکتا ہے کہ یہ بامعنی شاعری ہے۔ اچھی ردیف، شستہ زبان، خیالات میں نیا پن۔ شاعری میں روانی بھی اور ابلاغ بھی۔

دیکھ لو آہی گئی ہم کو بھی دنیا داری
پھول ہی پھول در یار پہ رکھ آیا ہوں

غالباً یہ ان کا پہلا مجموعہ ہے، جسے مثبت کوشش قرار دیا جاسکتا ہے۔ امید ہے، بے قیمتی کے اِن زمانوں سے شکست کھانے کے بجائے وہ جرات کے ساتھ اپنا سفر جاری رکھیں گے۔

Citation
Iqbal Khurshid, Farhan Fani, Rafiullah Mian “بُک شیلف,” in Express Urdu, July 12, 2015. Accessed on July 14, 2015, at: http://www.express.pk/story/374969/

Disclaimer
The item above written by Iqbal Khurshid and published in Express Urdu on July 12, 2015, is catalogued here in full by Faiz-e-Zabaan for non-profit educational purpose only. Faiz-e-Zabaan neither claims the ownership nor the authorship of this item. The link to the original source accessed on July 14, 2015, is available here. Faiz-e-Zabaan is not responsible for the content of the external websites.

Recent items by Iqbal Khurshid:

Help us with Cataloguing

Leave your comments

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s